ایئربورن وائرلیس نیٹ ورک نے نیٹ ورکس پر معلومات کی رفتار بڑھانے کے لیے جرمن فضائیات کے ذیلی ادارے وایالائٹ کے ساتھ مفاہمت کی یادداشت پر دستخط کرلیے

ایئربورن وائرلیس نیٹ ورک نے نیٹ ورکس پر معلومات کی رفتار بڑھانے کے لیے جرمن فضائیات کے ذیلی ادارے وایالائٹ کے ساتھ مفاہمت کی یادداشت پر دستخط کرلیے

March 13, 2017 | Technology, Urdu | Share:

لاس اینجلس، 13 مارچ 2017 / پی آر نیوز وائر / — ایئربورن وائرلیس نیٹ ورک (او ٹی سی کیو بی: ABWN) (“ادارہ”) یہ بتاتے ہوئے خوش ہے کہ وہ جرمن ایرواسپیس سینٹر (ڈی ایل آر) کے ذیلی ادارے وایالائٹ کے ساتھ مفاہمت کی یادداشت (“معاہدے”) میں داخل ہوگیا ہے۔ معاہدے کے تحت دونوں ادارے لیزر پر چلنے والی مواصلاتی نظام کو ایئربورن براڈبینڈ نظام سے مکمل ہم آہنگ کمپنی کے زیر غور انفنیٹس سپر ہائی وے ٹ م سے منسلک کرنے کا طریقہ تلاش کریں گے تاکہ معلومات کی رفتار کو آج کے موجودہ نیٹ ورکس سے کہیں زیادہ تیز اور بہتر بنایا جاسکے۔

کمپنی کے نائب صدر برائے بزنس ڈیولپمنٹ اینڈ ایوی ایشن کمپلائنس جیسن ٹی ڈی موس نے کہا کہ ہم یقین رکھتے ہیں کہ ہمارا ہائبرڈ نظام ایک مرتبہ تیار ہوجانے کے بعد، روایتی ریڈیو-لنکس کے ساتھ لیزر کو منسلک کر کے ایئربورن کی بنیاد کو وسیع-قابلیت فراہم کر سکتا ہے جو مناسب قیمت پر غیر معمولی بینڈوتھ فراہم کرے گا۔ ہمارا مقصد انٹرنیٹ میں ہوائی جہاز کا بالکل درست مقام معلوم کرنے کے لیے ریڈیو فریکوئنسی کنٹرول اور معلومات کے تبادلے کے لیے لیزر اور ریڈیو فریکوئنسی کے درمیان منتقلی کی قابلیت کو یکجا کرنا ہے جو ہمارے زیر غور نظام کو ناموافق موسمی صورتحال میں بھی کامیابی سے کام کرنے کے قابل بنائے گا اور یوں دونوں شعبوں کو بہترین سہولیات حاصل ہوں گی۔

لیزر جام اور منقطع ہونے سے 100 فیصد محفوظ ہے۔ یہ اپنی انتہائی باریک بیم پھیلاؤ کے باعث بدستور پوشیدہ رہے گی۔ مجوزہ ہائبرڈ لیزر مواصلاتی نظام میں انتہائی طویل فاصلاتی مواصلات تک کے لیے آنکھوں کو نقصان نہ پہنچنے والی لیزر لائٹ کو معلومات کی ترسیل کے طور پر استعمال کیا جائے گا۔ یہ مجوزہ ہائی-بینڈوڈتھ نظام کسی بھی موجودہ مسابقتی ٹیکنالوجی کے لیے ناقابل رسائی بنائے گا۔

وایالائٹ کے بارے میں

وایالائٹ زمین، فضا اور خلا میں ایک سے دوسری جگہ موصلاتی منظرنامہ میں 15 سال سے زائد کا وسیع لیزر مواصلاتی تجربہ رکھتا ہے۔ وایالائٹ 750 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے اڑنے والے ٹورنیڈو جنگی جہاز میں اپنا لیزر ٹرمینل کامیابی کے ساتھ شامل کرچکا ہے۔ اس کی ٹیکنالوجی طویل فاصلوں کے درمیان انتہائی موثر اور حفاظت کے ساتھ برق رفتار کمیونی کیشن کی سہولت فراہم کرتی ہے۔

ایئربورن وائرلیس نیٹ ورک کے بارے میں

کمپنی پرواز کرنے والے کمرشل طیاروں کو باہم منسلک کرکے تیز رفتار براڈبینڈ وائرلیس نیٹ ورک تخلیق کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔ تجویز کیا جاتا ہے کہ نیٹ ورک میں حصہ لینے والا ہر طیارہ ایک اڑتے ہوئے رپیٹر یا راؤٹر کے طور پر کام کرے گا، جو ایک جہاز سے دوسرے پر براڈ بینڈ سگنلز بھیجے اور وصول کرے گا اور یوں فضا میں ایک ڈجیٹل سپر ہائی وے تشکیل دے گا۔ کمپنی کوریج کنیکٹیوٹی کو بہتر بنانے کے لیے تیز رفتار براڈبینڈ انٹرنیٹ پائپ لائن کا نیٹ ورک بننے کا ارادہ رکھتی ہے۔ کمپنی اختتامی صارفین کو خوردہ صارفی کوریج فراہم کرنے کا ارادہ نہیں رکھتی، بلکہ اس کے بجائے، ایک ہول سیل کیریئر کے طور پر کام کرنے کی خواہاں ہے جو صارفین کو ہدف بنائے، جیسا کہ انٹرنیٹ سروس فراہم کنندہ اور ٹیلی فون کمپنیاں۔

اس وقت عالمی کنیکٹیوٹی زیر آب کیبلوں، زمین پر موجود فائبر اور سیٹیلائٹس کے ذریعے حاصل کی گئی ہے۔ کمپنی کو یقین ہے کہ کمپنی کی ایئربورن ڈجیٹل ہائی وے دنیا کے کنیکٹیوٹی خلا کو پورا کرنے کے لیے ایک معقول حل ہے۔ ایک مرتبہ نیٹ ورک بننے اور مکمل نافذ ہو جانے کے بعد اس کا استعمال لگ بھگ لامحدود ہے۔ کمپنی کا نیٹ ورک، ایک مرتبہ بن جانے کے بعد، دوران پرواز کمرشل اور نجی طیاروں کے ساتھ ساتھ دیہی علاقوں، جزائر پر مشتمل ممالک، سمندروں میں موجود بحری جہازوں، تیل کے پلیٹ فارموں کو کم خرچ، تیز رفتار کنیکٹیوٹی فراہم کرنی چاہیے۔

مزید معلومات کے لیے دیکھیں: www.airbornewirelessnetwork.com

مستقبل کے حوالے سے بیانات کے بارے میں اطلاع

یہ اعلامیہ “مستقبل کے حوالے سے بیانات” رکھتا ہے جو امریکی پرائیوٹ سکیورٹیز لٹیگیشن ریفارم ایکٹ 1995ء کے سیف ہاربر بیانات کے زمرے میں آتے ہیں۔ یہ بیانات ادارے کی انتظامیہ کے موجودہ یقین اور توقعات پر مبنی ہیں اور واضح خطرات اور غیر یقینی کیفیات سے مشروط ہیں۔ اگر یہ مفروضے غلط ثابت ہوئے یا خطرات یا غیر یقینی کیفیات حقیقت کا روپ دھار گئیں تو حقیقی نتائج مستقبل کے حوالے سے بیانات میں پیش کردہ سے مختلف ہو سکتے ہیں۔

خطرات اور غیر یقینی کیفیات میں سرمائے کی دستیابی؛ نئی مصنوعات یا ٹیکنالوجیوں کی تیاری سے منسلک اور ایک ترقی پذیر ادارے کی حیثیت سے کام کرنے کی فطری غیر یقینی کیفیات؛ اپنے کاروبار کو چلانے یا مصنوعات کو آگے بڑھانے کے منصوبوں کو جاری رکھنے کے لیے درکار اضافی سرمایہ کاری کے حصول کی ہماری صلاحیت؛ اپنے ٹیکنالوجی پلیٹ فارم پر مبنی مصنوعات کی تیاری اور کمرشلائز کرنے کی ہماری صلاحیت؛ جس صنعت اور مارکیٹ میں ہم کام کرتے ہیں اس میں مسابقت؛ عام صنعتی حالات؛ عام اقتصادی عوامل؛ صنعتی احکامات کا اثر؛ ٹیکنالجی میں جدت؛ مقابل اداروں کی نئی مصنوعات اور حاصل کردہ پیٹنٹس؛ ساخت گری میں مشکلات یا تاخیر؛ ادارے کے پیٹنٹس کی موثریت پر انحصار؛ اور قانون سازی کی زد میں ہونا، بشمول پیٹنٹ قانون سازی، اور/یا انضباطی اقدامات۔

رابطہ:
info@airbornewirelessnetwork.com
805-583-4302

Tags:

Category: Technology, Urdu