گوانگسی: آسیان کے ساتھ سائنٹیفک اور ٹیکنالوجیکل انویشن میں تعاون کے نئے امکانات کے لئے تیار

ناننگ، چین، ستمبر 28، 2021/ژنہوا-ایشیا نیٹ/ چین-آسیان ٹیکنالوجی ٹرانسفر اور کولیبریٹیو اِنّوویشن سے متعلق نویں فورم کا افتتاح، 9 سے 13 ستمبرکو، ناننگ میں ہوا۔ کانفرنس میں چین-آسیان ٹیکنالوجی ٹریڈنگ پلیٹ فارم اور چین-آسیان سائنس اور ٹیکنالوجی ٹیلنٹ کے لیے انوویشن اسپیس کا باضابطہ آغاز کیا گیا۔

حالیہ برسوں میں، گوانگسی کے شعبہ سائنس اور ٹیکنالوجی نے گوانگسی کے سازگار جغرافیائی محل وقوع سے بھرپور استفادہ کیا ہے، یعنی آسیان ممالک سے ملحق ہونے کے باعث، “دی بیلٹ اینڈ روڈ” سائنس، ٹیکنالوجی اور انوویشن ایکشن پلان پر عمل کیا، چین کے آسیان ٹیکنالوجی ٹرانسفر سینٹر (یہاں بعد میں جس کا “CATTC” کے بطور حوالہ دیا گیا ہے) کی تعمیر کو مستحکم کیا، جبکہ گوانگسی اور آسیان کے مابین سائنسی اور تکنیکی جدت میں تعاون کا ایک نیا موقع پیدا کرنے کی کوشش کی۔

چین آسیان ٹیکنالوجی ٹرانسفر سینٹر کی عمارت

وزارت سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کی رہنمائی میں، گوانگسی کے سائنس اور ٹیکنالوجی کے شعبے نے ٹیکنالوجی کی منتقلی کے ایک نئے موڈ کا آغاز کیا، تھائی لینڈ، لاؤس اور کمبوڈیا سمیت 9 آسیان ممالک کے ساتھ بین سرکاری دو طرفہ ٹیکنالوجی ٹرانسفر میکانزم قائم کرنے میں CATTC کی مدد کی، 7 آسیان ممالک کے ساتھ مشترکہ ٹیکنالوجی ٹرانسفر ورکنگ گروپ قائم کیا، اور چین-آسیان ٹیکنالوجی ٹرانسفر تعاون نیٹ ورک قائم کیا جس میں 10 آسیان ممالک اور بیلٹ اینڈ روڈ انیشیٹو کے کچھ ممالک جن کے 2،600 سے زائد ارکان ہیں شامل ہیں، جس نے چین اور آسیان ممالک کے درمیان سائنٹفک اور ٹکنیکل انویشن میں مستحکم تعاون کو فروغ دیا ہے۔

گوانگسی کے سائنس اور ٹیکنالوجی کے شعبے نے انوویشن پلیٹ فارم قائم کرنے کے لیے اندرون اور بیرون ملک یونیورسٹیوں اور دیگر اداروں، جیسے کہ چین-آسیان ٹیکنالوجی ٹرانسفر سینٹر بینکاک انوویشن سینٹر، گوانگسی نان یانگ سائنٹفک اور ٹکنیکل انوویشن سینٹر، اور چین-آسیان علاقائی انوویشن سینٹر برائے بگ ارتھ ڈیٹا کے ساتھ، گوانگسی کی جدت پر مبنی ترقیاتی حکمت عملی کی تعمیل کے لئے فعال تعاون کیا،  نئے ڈوئل سائیکل پیٹرن کے تحت ملکی اور بین الاقوامی سائنٹفک اور ٹکنیکل انویشن کے وسائل کے اشتراک کے طریقہ کار کو فروغ دیا، سائنس اور ٹیکنالوجی کے اداروں، گوانگسی کی یونیورسٹیوں اور دیگر اداروں کو 9 آسیان ممالک میں 20 مشترکہ لیبارٹریز یا جدت کے مراکز قائم کرنے میں مدد دی، اور “دی بیلٹ اینڈ روڈ” اقدام کے ممالک، خاص طور پر آسیان ممالک کے ساتھ سائنس اور ٹیکنالوجی انویشن میں تعاون کیا، اور آسیان ممالک میں 12 زرعی سائنس اور ٹیکنالوجی پارکس کے قیام میں مدد دی، چین-تھائی لینڈ روایتی میڈیسن ریسرچ سینٹر اور چین-ملائیشیا جوائنٹ بیڈو ایپلی کیشن لیبارٹری وغیرہ کے ذریعے چین کی مسابقتی پیداواری صلاحیت کو “عالمی سطح پرجانے” کی ترغیب دی، اور آسیان ممالک میں جدید زراعت، نئی توانائی، روایتی ادویات، فوڈ پروسیسنگ، الیکٹرانک انفارمیشن اور کیمیکل انجینئرنگ میں جدید تکنیکی کامیابیوں کے استعمال کو فروغ دیا تاکہ سائنس، ٹیکنالوجی اور معیشت میں مقامی ترقی کو آگے بڑھایا جا سکے۔

ہیسیٹن برونائی ڈیپ سی کیج کلچر بیس۔

علاقائی ترقیاتی مسائل سے نپٹنے کے لیے، گوانگسی کے سائنس اور ٹیکنالوجی کے شعبے نے گوانگسی اور آسیان ممالک کے سائنسی تحقیقی اداروں اور کاروباری اداروں کے مابین بنیادی عمومی ٹیکنالوجیز کی مشترکہ تحقیق، ترقی اور عروج کو فعال طور پر فروغ دیا ہے۔ مثال کے طور پر، اس نے گوانگسی یونیورسٹی آف چائنیز میڈیسن، چائنیز اکیڈمی آف سائنسز اور تھائی لینڈ کی مہیدول یونیورسٹی کو ” قدرتی چینی اور تھائی دواؤں کے مواد پر مبنی اینٹی ناول کورونا وائرس ادویات پر تحقیق” کرنے میں مدد دی، COVID-19 کے علاج کے لیے دوائیوں کے امتزاج کا طریقہ کار کو مکمل کیا، ناول کوروناوائرس پروٹین کی دنیا کی پہلی سہ جہتی ساخت کا تجزیہ کیا اور اسے حاصل کیا، نئی اینٹی SARS-CoV-2 ادویات کی مزید ترقی کے لیے مضبوط مدد فراہم کی اور اور چین آسیان انفارمیشن ہاربر کمپنی لمیٹڈ کو فلپائن میں ٹیلی کمیونیکیشن انٹرپرائزز سے رابطہ کرنے میں مدد کی تاکہ فلپائن میں سمارٹ سٹی، کلاؤڈ کمپیوٹنگ، بگ ڈیٹا اور انٹرنیٹ آف تھنگز کی ترقی کو بڑھایا جا سکے۔

ذریعہ : ڈپارٹمنٹ آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی آف گوانگ ژوانگ آٹو نومس ریجن ۔

منسلکہ تصاویر کے لنکس:

لنک: http://asianetnews.net/view-attachment?attach-id=402014
لنک: http://asianetnews.net/view-attachment?attach-id=402026

 

 

 

چین مشرقی جیاگزنگ شہر کے ضلع نانہو میں کسانوں کی کاشت کے چوتھے میلے کا جشن منا رہاہے

جیاگزنگ،چین، 24 ستمبر 2021 /ژن ہوا-ایشیا نیٹ / — ضلع نانہو کے میڈیا ادارے کے مطابق،23ستمبر کے دن مشرقی چین کے صوبہ زیجیانگ کے جیاگزنگ  کے ضلع نانہو میں چوتھے ’’چائنیز فارمرز ہارویسٹ فیسٹیول‘‘ کا بڑا جشن منعقد کیاگیا،جو موسم خزاں کے درمیان میں پڑتاہے،جو چینی قمری کلینڈر کے 24قمری اصطلاحات میں سے ایک ہے۔

2018 میں شروع ہونے والے،چینی کسانوں کی کاشت کا یہ میلہ ہر سال موسم خزاں کے درمیان میں  آتا ہے،اور زیادہ تر کارگزاریوں اور کاشت کے مقابلے کے ساتھ منایا جاتاہے۔

اس سال   چین کی کمیونسٹ پارٹی (سی پی سی ) کے وجود میں آنے کے سو سال پورے ہونگے،جسے جیاگزنگ میں میلے کے جشن میں اجاگر کیا جائے گا۔کاشت کاری کی مخصوص اور متنوع سرگرمیوں کا ایک سلسلہ  انجام دیاجائے گا جس کے ذریعے کاشت کاری کا جشن منایا جائے گا اور سی پی سی قیادت کو خراج تحسین پیش کیاجائے گا۔

جیاگزنگ ،ضلع نانہو میں چاول کے کھیتوں کی مچھلی کی طرح نقشہ

ڈیجیٹل  ترقی جیاگزنگ میں میلے کے جشن کے مرکزی نکات میں سے ایک ہے۔ چین میں ،اور بلخصوص صوبہ  ژیجیانگ  میں آف لائن ڈسپلے،شعبہ جاتی کام،تعارفی ویڈیو اور نظام کے مظاہروں کو جدید زراعت اور ڈیجیٹل دیہی ترقی کی نئی کامیابیوں کو اجاگر کرنے کے لیے استعمال کیاجائے گا۔

سی پی سی جیاگزنگ کی میونسپل کمیٹی کے سیکرٹری ژانگ بنگ کے مطابق،جیاگزنگ کاشت کے اس میلے کو ایک موقع کے طور پر لے گا جس میں نئے زمانے کے گیت  کا مظاہرہ،زراعتی ثقافت کی بحالی اوربہتری اور ایک عالمی سطح کے دلکش  نظاروں کا مقام بنایا جائے گا۔        .

ژانگ کا مزید کہناتھاکہ جیاگزنگ  ایک اعلی معیار کا دیہی بحالی کا مثالی علاقہ بنانے کے لیے کوشاں ہے،اور دیہی اور زراعت سے وابستہ افراد کی خوشیوں اور فخر کو مزید بڑھائے۔شہر بھر میں دیہی بحالی اور عوام کی فلاح کے لیے ایک مثالی شہر کی تعمیر کے فروغ کےلیے کوششیں کی جائیں گی۔

چین کے دریائے یانگزے کے ڈیلٹا کےدور افتادہ پسماندہ علاقے میں  واقع جیاگزنگ دودھ اور شہد کی زمین اور ریشم کے مرکز کی شہرت کے ساتھ، دنیا میں چاول کی کاشت کاری کے اولین علاقوں میں سے ایک ہے۔1978سے،جیاگزنگ شہری اور دیہی ترقی کی متوازن ترقی کی راہ پر چل رہاہے اور زراعت اور دیہی علاقوں کی ترقی کو ترجیح دے کر،چین کے ان شہروں میں شامل ہوگیا جن میں شہری اور دیہی ملاپ بلند ترین سطح پر ہے۔

جیاگزنگ کی شہری زندگی کی شرح 70فیصد سے زیادہ ہے،اور اس کے دیہی باشندوں کی فی کس ڈسپوزیبل آمدنی کی شرح  چین میں بلند ترین شرح میں سے ایک ہے۔شہری اور دیہی باشندے ایک مربوط بنیادی طبی بیمہ  کا فائدہ اٹھاتے ہیں،جوایک مقامی شہری کو  دریائے یانگزے ڈیلٹا کے اردگرد  طبی بیمہ کا فائدہ اٹھانے کا موقع فراہم کرتاہے۔

جیاگزنگ کے ضلع نانہو،فینگ کیاوٗ کے لیانفینگ  گاوٗ ں کی سڑک پر چلتے ہوئے،انسان صاف دریاوٗ ں کے ساتھ سبز گھاس اور ایک جانب پھول،اوردوسری جانب سادہ اور خم کھاتے فارم ہاوٗس دیکھ سکتاہے۔

لیانفینگ گاوٗں کے سربراہ لی ژینگ فین کا کہناتھا ’’ایک دہائی قبل ،ہمارے گاوٗ ں میں روایتی کاشت کاری اور آبی زراعت کے غلبہ تھا،جس سے پیداوار کم اور آبادی زیادہ تھی ۔اب،گاوٗں میں ماحول بہتر ہوگیاہے اور صنعت میں بدلاوٗ آگیاہے۔‘‘گاوٗں نے ایک سیاحتی میڈیا کمپنی کی بھی بنیادرکھی ہے۔گزشتہ برس،گاوٗں کی کل آمدنی 2.16ملین یوآن تک جاپہنچی اور فی کس آمدنی تقریباًٍ40.000یوآن تک تھی۔

دیہی بحالی کی حکمت عملی کے بعد،ضلع نانہو نے مرکز ی شہر میں ایک معیاری ترقی کا منصوبہ زیر عمل لایا جس کے ذریعے پورے علاقے کو ایک قدرتی مقام بنایا جائے۔اس کوشش میں،ضلع نے 390علاقوں اور گلیوں میں تبدیلی لائی گئی ہے۔خوبصورت مضافاتی مقامات اور حسین ٹاوٗن کی تعمیر کے لیے کوششیں کی جارہی ہیں اور کئی 3A معیار کے دلکش گاوٗں  اور گاوٗں کی سیاحت کی خصوصیات رکھنے والے برانڈ بنائے جائیں۔زراعت اور سیاحت کی یکجا ترقی کے ساتھ،دیہاتوں کو کسانوں کے لیے خوشحال گھر بنایا جائے اور مقامی آمدنی کو بڑھانے  کے لیے تفریحی پارک بنائے جائیں اور دیہی بحالی کی اہمیت کو  مزید اجاگر کیا جائے۔2020 میں،ضلع نانہو میں دیہی سیاحت کے 520,000 دورے ہوئے جس سے کل ملاکر تقریباً30ملین یوآن کی آمدنی حاصل ہوئی۔

اس کے علاوہ،ورلڈ انٹرنیٹ کانفرنس کے مستقل مقام کی حیثیت سے،جیاگزنگ نے دیہی بحالی کی حکمت عملی کے خدوخال کو  اور ڈیجیٹل معیشیت کی ترقی کے  اعلی منصوبے کی اچھی طرح پیروی کی ہے تاکہ زراعت اور دیہی امور کے انتظامات کو مزید جدید بنایاجائے۔

رواں سال جون میں،کل 60ملین یوآن کی سرمایہ کاری کے ساتھ نانہو ایگریکلچر اکنامک ڈیولپمنٹ زون میں زیانگ جیاڈانگ کی زراعت کی ڈیجیٹل فیکٹری   مکمل ہوئی۔

یہ فیکٹری زراعتی پیداوار اور انتظام کو مزید  صنعتی ،معیاری ،جدید بنانے  اور مالیات کے ساتھ جوڑنے کے لیے جدید زراعتی تکنیکوں کے کئی طریقے استعمال کرتی ہے۔

فیکٹری کے سفید مائل ذہین گرین ہاوٗس میں داخل ہوتے ہوئے ایسا محسوس ہوتاہے جیسے کسی صفائی کرنے کے ورک شاپ میں داخل ہوئے ہیں کیونکہ وہاں کوئی زمین کی سطح نہیں دکھتی،بلکہ خودکار روشن لائٹوں کے نیچے اگتی حقیقی  فصل ہی دکھائی دیتی ہے۔فصل کےلیے ضروری درجہ حرارت،روشنی،پانی ،گیس اور کھاد ذہانت کے سینسر حاصل کرتے ہیں،اور پیچھے چلنے والے بڑے اعدادوشمار کی نظر ثانی کے ذریعے ایک فی الوقت سائنسی تنظیمی حکمت عملی تشکیل دی جاتی ہے ،جو پھر ایک زبردست نظام کے ایک مکمل سیٹ کو وجود میں لاتی ہے۔

زیانگ جیاڈانگ کی زراعت کی جدید فیکٹری کی سالانہ پیداوار کا تخمینہ 10ملین یوآن سے بڑھنے کا اندازہ لگایاجارہاہے۔یہ ہر سال مقامی افراد کو  ایک ملین کلوگرام  کی اعلی معیار کی تازہ سبزیاں فراہم کرسکتی ہے ،اور 500سے زائد کسانوں کو تکنیکی ملازمت فراہم کرے گا۔

جیاگزنگ چین کے انقلابی دور کے ایک اہم سنگ میلوں میں سے ایک ہے۔1921 کے موسم گرما میں،شنگھائی میں منعقد چین کی کمیونسٹ پارٹی کے پہلے نیشنل کانگریس کو ہنگامی طور پر جیاگزنگ کے نانہو جھیل کے ایک چھوٹی کشتی کو منتقل کیاگیا،اور کانگریس کا ایجنڈا  اس کشتی پر مکمل کیاگیا۔جیاگزنگ میں نانہو جھیل وہ مقام بن گئی ہے جہاں سے چینی انقلاب کی رہنما دستہ روانہ ہوا۔

ذریعہ : ضلع نانہو کا میڈیا سینٹر،جیاگزنگ شہر،صوبہ زجیانگ

تصویر : http://asianetnews.net/view-attachment?attach-id=401700

 

 

الائٹ نے سوشل انوویٹر، جوزلین ویاٹ کا نئے سی ای او کے طور پر خیرمقدم کیا

ویاٹ نے نئے باب کا آغآز کرتے ہوئے عالمی فلاحی تنظیم کی قیادت سنبھال لی

منیپولیس، 23  ستمبر2021 /پی آر نیوزوائر/ — عالمی فلاحی تنظیم، الائٹ، جوسلین ویاٹ کو نیا  سی ای او مقرر کرنے کا اعلان کرتی ہے۔ویاٹ جو پچھلے 10برس سے IDEO.org  کی سی سی او کے طور پر کام کرتی رہی ہیں،اب باقاعدہ طور پر 15دسمبر 2021 کو آلائٹ کی قیادت سنبھالیں گی ،جہاں پر وہ دنیابھر میں 3500 سے زائد ٹیموں کی سربراہی کریں گی۔https://mma.prnewswire.com/media/1193251/Alight_Logo.jpg

بین الاقوامی سطح پر اسٹریٹجک ترقی میں ویاٹ کا وسیع تجربہ دراصل انسانوں پر مرکوز ہے اور اس کام کے ساتھ انکی ہم آہنگی ہے جو الائٹ 20 سے زائد ممالک میں ہر سال 3.5 ملین سے زائد مہاجرین اور بے گھر لوگوں کے لیے باوقار جگہیں اور انسانیت کےلیے موزوں سہولیات تخلیق کرنےکے لیے کرتا ہے۔

الائٹ کے بنیادی مقصد کے ساتھ جڑے ہوئے ، تنظیم کا سی ای او کےتلاش کا عمل دنیا بھر سے ٹیم کے ارکان کو سننے اور ان کے ساتھ تعاون کرنے میں مصروف تھا جنہوں نے الائٹ کی تلاش کے فریم ورک کی تعمیر کے لیے اپنی رائے اور بصیرت کا حصہ ڈالا۔ کئی مہینوں کے محتاط غور و فکر اور درجنوں انتہائی اہل امیدواران کے ساتھ بات چیت کے بعد ، ویاٹ، تنظیم کے لیے ہرفن مولا اور موزوں رہنما کے طور پر ابھریں۔

الائٹ بورڈ آف ڈائریکٹرز کی چیئرمورین ریڈ کا کہناتھا’’ کہ ہم ایسے ایک تخلیقی حکمت عملی تیار کرنے والی  اور بین الاقوامی این جی او کمیونٹی کی انتہائی معزز رکن کا خیر مقدم کرتے ہوئے بہت زیادہ خوش ہیں۔‘‘ان کا مزید کہناتھا ’’ ایک ہمدرد اور تجربہ کار عالمی رہنما  کے طور پر، جوسلین، الائٹ اور اس کے مشن کو بڑی حد تک سمجھتی ہیں کہ وہ بے گھر لوگوں کے لیے اور ان کے ساتھ ایک بامعنی زندگی کی تعمیر کرے ، اور ہر اس شخص میں ترقی کو بڑھائیں جس کے ساتھ ہم کام کرتے ہیں۔ ہمیں فخر ہے کہ وہ ہماری تنظیم کی رہنما کے طور پر ہماری کاوشوں میں شامل ہوئیں۔‘‘

ویاٹ IDEO.orgکی شریک بانی اور سی ای او کے موجودہ عہدے سے آلائٹ میں تشریف لائی ہیں،جو ایک عالمی ڈیزائن اسٹوڈیو ہے جو این جی اوز کے ساتھ شراکت داری کرکے مصنوعات اور خدمات کو ڈیزائن کرتا ہے جو ایک زیادہ منصفانہ اور جامع دنیا بناتی ہے۔ وہاں انہوں نے اپنے دورمیں، ڈی ایف آئی ڈی (برطانیہ کا محکمہ برائے بین الاقوامی ترقی) ، بل اینڈ میلنڈا گیٹس فاؤنڈیشن ، پی ایس آئی (سابقہ ​​پاپولیشن سروسز انٹرنیشنل) ، اور الائٹ سمیت بہت سی دوسری تنظیموں کے ساتھ دنیا بھر میں تعاون کی قیادت کی،جس میں آلائٹ بھی شامل تھا۔ گزشتہ ایک دہائی کے دوران، ویاٹ نے الائٹ کے کچھ انتہائی مؤثر اور اہم اقدامات کی تشکیل میں مدد کی ، جیسے: آئی ایم اے سٹار مہم ، اسیلی ، کوجا کوجا ، دی کلر موومنٹ ، اِن آور ہینڈز ، اور بیکمنگ الائٹ۔

آنے والی سی ای او ویاٹ  کا کہنا تھا’’ دنیا بھر میں 82 ملین مہاجرین اور بے گھر لوگوں کے ہوتے ہوئے ، برادریوں کے ساتھ نئے حل بنانے کا موقع پہلے سے کہیں زیادہ اہم ہے ، الائٹ کوشش کرتا ہے کہ اسٹیٹس کو، پر دوبارہ غور کریں ، اور تنظیم کے اندر متنوع اور مختلف آوازوں کو شامل کرکے دنیا کے بے گھر ہونے کی داستان کو تبدیل کرنے میں مدد کریں۔”

ویاٹ کی پہلی ترجیحات میں سے ایک،الائٹ اور اس سے وابستہ تنظیموں کے عالمی مشاورتی  دورے کا آغاز کرنا ہے، اس ارادے کے ساتھ کہ وہ ہراس شخص کو میز پر مدعو کریں گی جس کے ساتھ گفتگو ہوسکے،اس کی بات سنی جائے اور ملکر سیکھا جائے۔

الائٹ کے بد لاوٗ لانےکے کام اورانکی خدمت کرنے والے  لوگوں کے نیٹ ورک کے بارے میں مزید جاننے کے لیے وزٹ کریں: www.wearealight.org.

الائٹ کے بارے میں

الائٹ کو 1978 میں اس کے بانی نیل بال نے قائم کیا ، الائٹ ، جو پہلے امریکی پناہ گزین کمیٹی کے نام سے جانا جاتا تھا ، سالانہ 20 سے زائد ممالک میں 3.5 ملین سے زائد لوگوں کو صحت عامہ ، صاف پانی ، پناہ گاہ ، تحفظ اور معاشی مواقع فراہم کرتا ہے۔ الائٹ بے گھر افراد کی ناقابل یقین تخلیقی صلاحیت ، استعداداور آسانی پر یقین رکھتا ہے اور ان کی انسانیت کو اجاگر کرنےکا کام کرتی ہے، جو کام پہلے ہی زبردست طریقے سے ہورہاہے اور مزید کام کرنے کے امکانات ہیں۔ ایک دہائی کے اثرانگیز کام کی کامیابی کو مناتے ہوئے 2020 میں، الائٹ نے مسلسل دسویں سال چیریٹی نیویگیٹر کی طرف سے زبردست 4 اسٹارریٹنگ حاصل کی ہے۔

لوگو:  https://mma.prnewswire.com/media/1193251/Alight_Logo.jpg

 

 

د پنځم بیلټ اینډ روډ ټین ایجر میکر کیمپ او د ټیچر ورکشاپ باضابطہ آغاز وشو۔

بیجنګ ، ستمبر 22 ، 2021 / پی آر نیوز وائیر / – ستمبر نا تر نومبر 2021 پورے د پنځمی بیلټ اینډ روډ ټین ایجر میکر کیمپ او ټیچر ورکشاپ چائنا ایسوسی ایشن فار سائنس اینډ ټیکنالوجی (CAST) ، د عوامی جمہوریہ چین وزارت سائنس و ټیکنالوجی (MOST) ، چونګ کنګ میونسپل پیپلز حکومت او ګوانګ ژوانګ خود مختاری علاقے د عوامی حکومت مشترکه تعاون او  IAP SEP ، ECOSF ، NASAC ، ALECSO او د ANSO بھرپور حمایت سره منعقد شو۔ کیمپ یو مفت بین الاقوامی تبادلہ سرګرمی دا کومه چی جونیئر او سینئر ہائی سکولونو او د استاذانو شاګردانو د پاره کلاوه ده۔  دا عظیم الشان ایونټ دلچسپ آن لائن د سرګرمیانو په  یو وسیع صف باندے مشتمل دے کوم چی آن لائن سائنس کورسز ، سائنس ایجوکیشن فورم ، د سائنسدانانو لیکچرز ، چینی یونیورسټو لائیو سټریمنګ ، سیکنډری سکولز او ریسرچ انسټی ټیوټس ، سائنس ورکشاپ او سائنس شو ، راکټ لانچنګ براډکاسټ ، او د مختلف ملکونو ثقافتی شو حامل دے۔ د ده ایونټ  آفیشل ویب سائټ https://2021.brmakercamp.cyscc.org.cn دے۔

‫5ویں بیلٹ اینڈ روڈ ٹین ایجر میکر کیمپ اور ٹیچر ورک شاپ کا باقاعدہ آغاز ہوگیا۔

بیجنگ، 22ستمبر 2021 /پی آر نیوز وائر / –ستمبر سے نومبر 2021تک منعقد ہونے والی،پانچویں بیلٹ اینڈ روڈ ٹین ایجر میکر کیمپ اور ٹیچر ورک شاپ کو چائنا ایسوسیشن فار سائنس اینڈ ٹیکنالوجی (سی اے ایس ٹی)،عوامی جمہوریہ چین کی وزارت سائنس اورٹیکنالوجی (ایم او ایس ٹی) ،چونگچن کی عوامی بلدیاتی حکومت،اور گوانگژی ژوانگ کے خودمختار علاقے کی عوامی حکومت نے ،آئی اے پی اسی ای پی،ای سی او ایس ایف،این اے ایس اے سی،اے ایل ای سی ایس او اور اے این ایس او کی بھر پور مدد کے ساتھ مشترکہ اسپانسر کیا۔یہ کیمپ جونیئر اور سینیئر ہائی اسکول کے طلبائ اور اساتذہ کے لیے ایک مفت بین الاقوامی سرگرمیوں کے تبادلے کے لیے دستیاب ہے۔یہ عالیشان تقریب مختلف دلچسپ آن لائن سرگرمیوں پر مشتمل ہے جن میں آن لائن سائنس کورس،سائنسی تعلیم کا فورم،سائنسدانوں کے لیکچر،چینی یونیورسٹیوں کی جانب سے لائیو سٹریمنگ،سیکنڈری اسکولوں اور تحقیقی ادارے،سائنسی ورک شاپ اور سائنسی مظاہرے،راکٹوں کے لانچ ہونے کی براڈ کاسٹ،اور مختلف ممالک کے ثقافتی مظاہرےشامل ہیں۔اس تقریب کے لیے متعلقہ ویب سائٹ  https://2021.brmakercamp.cyscc.org.cnہے۔

 

‫ریاست ہائے متحدہ امریکہ کے انسٹی ٹیوٹ آف پیس کا امن کے عالمی دن کے موقع پر 2021 کے خواتین بلڈنگ امن ایوارڈ کے فائنلسٹس کا اعلان

واشنگٹن، 22 ستمبر 2021 /پی آر نیوز وائر/ — ریاست ہائے متحدہ امریکہ کے انسٹی ٹیوٹ آف پیس (یو ایس آئی پی) کو امن کے عالمی دن پر 2021 کے ویمن بلڈنگ پیس ایوارڈ کے فائنلسٹس کا اعلان کرتے ہوئے فخر ہے۔

یہ عالمی ایوارڈ ہر سال امن ساز خاتون کو دیا جاتا ہے جنہوں نے اپنے ملک میں امن کے لئے خدمات سرانجام دی ہوں۔

اس سال یو ایس آئی پی کو 30 سے زائد ممالک سے نامزدگیاں موصول ہوئیں ہیں۔

محتاط اندازسے جائزہ اور غور و خوض کرنے کے بعد ممتاز ماہرین اور رہنماؤں کی ایک کونسل نے مندرجہ ذیل فائنلسٹوں کا انتخاب کیا ہے: پاکستان سے تبسم عدنان، کینیا سے جوزفین ایکرو، کولمبیا سے ٹیریسیتا گاویریا، کولمبیا سے والڈسٹروڈیس ہرٹاڈو، ڈیموکریٹک ریبلک کانگو سے تتیانا موکانیر، کیمرون سے ایستھر اوم، جنوبی سوڈان سے نیاچانگکوتھ تائی، کینیا سےجین ڈبلیو ویتیتو اور بنگلہ دیش سے رانی یان یان شامل ہیں۔https://mma.prnewswire.com/media/1274028/United_States_Institute_of_Peace_Logo.jpg

رواں سال کے ایوارڈ کے حاصل کرنے والوں کا اعلان 20 اکتوبر2021 کو واشنگٹن ڈی سی میں نیشنل مال پر یو ایس آئی پی کے مشہور کیمپس میں ایک تقریب میں کیا جائے گا۔

یو ایس آئی پی کی صدر اور سی ای او لیز گرانڈے نے کہا کہ دنیا بھر میں خواتین تنازعات کی روک تھام، تشدد کو کم کرنے اور جنگوں کے خاتمے میں قائدانہ کردار ادا کرتی ہیں۔ ہمارے لیئے اعزاز ہے کہ ہم نمایاں کاوشیں کرنے والی خواتین کے کام کو سراہیں اور سیلیبریٹ کریں۔

سلیکشن کونسل کی شریک چیئر میگن بیئر نے کہا کہ ان خواتین کو روزانہ کی بنیاد پر بے پناہ مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے جو اکثر امن کے لیے اپنی جان خطرے میں ڈالتی ہیں۔ ہمیں ان کی ہمت و جرت میں انکے ساتھ کھڑے ہیں۔

کونسل کی شریک چیئر مارسیا کارلوچی نے کہا کہ ہم نے فائنلسٹ کے طور پر جن خواتین کا انتخاب کیا ہے ان میں سے ہر ایک کمیونٹی اور ملک کے ساتھ بہادری، قیادت اور عزم کو عملی شکل دیتی ہے جسے یہ ایوارڈ تسلیم کرتا ہے۔

کونسل کے اعزازی چیئر نینسی لنڈبورگ نے کہا کہ ان خواتین کی کہانیاں پڑھنا عاجزانہ، متاثر کن اور توانائی بخش ہیں۔ ان کی کوششوں سے خواتین امن قائم کرنے والوں کی نسلوں کی حوصلہ افزائی ہوگی۔

کانگریس نے 1984 میں بیرون ملک پرتشدد تنازعات کی روک تھام اور خاتمے اور امن کے لئے امریکہ کے بنیادی عزم کو برقرار رکھنے کے لئے ایک آزاد، غیر جانبدار، قومی ادارے کے طور پر یو ایس آئی پی کی بنیاد رکھی۔

www.usip.org/womenbuildingpeaceایوارڈ سے متعلق مزید تفصیلات جاننے کےلیئے وزٹ کریں:

https://www.usip.org/aboutیو ایس آئی پی سے متعلق مزید تفصیلات جاننے کےلیئے وزٹ کریں:

لوگو: https://mma.prnewswire.com/media/1274028/United_States_Institute_of_Peace_Logo.jpg

کامیابی سے منعقد ہونے والی17 ویں سی آئی ایس ایم ای ایف کا مقصد دنیا بھر میں ایس ایم ایز کو فوائد اور مواقع فراہم کرنا تھا

گوانگژو، چین 20ستمبر 2021 /ژن ہوا-ایشیا نیٹ / –17ویں چائنا انٹرنیشنل  اسمال اینڈ میڈیم انٹرپرائز کا میلہ (سی ایس ایم ای ایف)16ستمبر تا 19ستمبر تک جنوبی چین کے صوبہ گوانگڈانگ کے دارالحکومت گوانگژو میں منعقد ہوا۔اس میلے نے 30سے زائد ممالک اور خطوں سے کمپنیوں کو شرکت کے لیے اپنی جانب متوجہ کیا۔یہ ایک زبردست پلیٹ فارم ہےاور ایس ایم ایز کو اندرون ملک اور بیرون ملک میں تعاون اور ترقی کا معیار بڑھانے کے نئے مواقع فراہم کرتاہے۔

روبوٹک ہاتھ ،خودکار گائیڈڈ گاڑیاں،مختلف مصنوعات نظروں کو دعوت دیتی ہے۔

تقریباً 1000کمپنیاں، جو یا تو مخصوص ٹیکنالوجی  میں سبقت رکھتی ہے،یا   ریفائنڈ مصنوعات اور تکنیک،نایاب اشیائ  یا سہولیات،یا ٹیکنالوجی اوریا پیداواری طریقے میں اختراعات،کرنے والی کمپنیوں نے سی آئی ایس ایم ای ایف میں حصہ لیا۔انھوں نے زیادہ تر بہترین تیاری اور مصنوعی ذہانت ،سازوسامان کی تیاری،الیکٹرانک معلومات ،بائیو میڈیسن،اور غذا اور زراعت جیسی صنعتی شعبوں پر توجہ دی ۔

شاندار نمائشوں کے علاوہ،کاروبار کےترقی کے مواقع اور سرگرمیوں کے تبادلے کی تمام اقسام بھی قابل توجہ ہیں۔سی آئی ایس ایم ای ایف نے سرگرمیوں کے ایک سلسلے کا بندوبست کیا جس کا ہدف نمائشی صنعتی شعبے ہیں،جن میں 12سپلائی اور ڈیما نڈ  کی ڈاکنگ سرگرمیاں،4موضوعاتی سرگرمیاں،3سرحد پار کاروباری معاہدے طے کرانے کی سرگرمیاں اور بیرون ملک نمائش کنندگان کے لیے 6تشہیری سرگرمیاں،اس امید کے ساتھ کہ نمائش کنندگان اور خریدار وں کو مزید جامع اور پر اثر سہولیات فراہم کیں جائے۔

گوانگژو کی کیمسون ٹریڈ کمپنی لمیٹیڈ پہلی بار سی آئی ایس ایم ای ایف میں حصہ لے رہی ہے۔کیمسون الیکٹرواسٹیٹک پاوٗڈر کوٹنگ ایریا میں مہارت رکھتی ہے،اور اپنے صارفین کو ذہین خودکار کوٹنگ اسکیم اور سہولیات فراہم کرتی ہے۔کیمسون کے ریسرچ اور ڈیولپمنٹ ڈائریکٹر شو گن کا کہناتھا ’’سی آئی ایس ایم ای ایف ہمارے جیسی خاص ٹیکنالوجی والی کمپنیوں کو ایک زبردست پلیٹ فارم مہیا کرتا ہے۔ایک طرف،ہمارے پاس موقع ہے کہ ہم اپنی مصنوعات اور برانڈ کی تشہیر کریں۔اور دوسر ی طرف، یہ ہمیں دوسرے شعبوں سے منفرد ٹیکنالوجی کے بارے میں سیکھنے میں مدد کرتاہے،جو پھر ہم یاد کر کے اپنے شعبے میں استعمال کرتے ہیں،اور صارفین کو بہتر سہولیات فراہم کرتے ہیں۔‘‘

رونمائی،لین دین،تبادلہ،تعاون۔سی آئی ایس ایم ای ایف ایک ایسے اہم پلیٹ فارم کے طور پر کام کرتا ہے جو دنیا بھر کے ایس ایم ایز کے لیے بنایاگیاہے۔یہ کمپنیوں کو سپلائر اور خریدار کے مابین تعاون کے لیے معلومات اور کاروباری ،اور تکنیکی تبادلے کے مواقع فراہم کرتاہے۔اسی دوران،یہ نمائش چین کے ابلاغ کے فروغ کی اور اندرون و بیرون ملک ایس ایم ایز کے مابین تعاون کی جانب زبردست راہ دکھاتاہے،اور کثیر الجہتی تجارت کا مشورہ دیتاہے۔

ایس ایم ایز کے لیے بین الاقوامی تعاون سمٹ،نمائش کے ساتھ مل کر،عالمی سطح پر ایس ایم ایز کے حصول کےقابل غورایک  منصوبے کاباقاعدہ اعلان کیا،جس کی مالیت 826.3بلین یوآن ہے۔سیمیناروں کا ایک سلسلہ رکھا گیا،جن میں ایس ایم ای کی حکمت عملیوں پر وزیروں کی سطح پر ایک راوٗ نڈ ٹیبل سیمینار تھا،جس میں ان تجربات کا تبادلہ کیاگیا کہ کس طرح ایس ایم ایز کی مشکلات کو بہتر طریقے سے حل کیاجائے۔

کئی نمائش کنندگان کے لیے،ایس ایم ایز کی یہ زبردست بین الاقوامی تقریب ان کو عالمی کاروباری سرگرمیوں کے ساتھ جڑنے کو مزید بڑھائیں گی اور باہمی فوائد اور عام ترقی حاصل کرنے میں مدد کرے گی۔گوانگڈانگ جیٹن روبوٹ اینڈ آٹومیشن کمپنی لمیٹیڈ نے اس میلے میں نئی خودکار گائیڈڈ  گاڑیاں پہلی بار متعارف کرائیں۔کمپنی کے ڈپٹی جنرل منیجر وانگ میکوئی کا خیال ہے کہ سی آئی ایس ایم ای ایف مصنوعات کی تشہیر کے لیے ایک اچھا موقع فراہم کرتاہے۔ان کا کہناتھا’’ہم چاہتے ہیں کہ مزیدلوگ ہماری مصنوعات کے بارے میں جانیں، اور یہ بہت اہم ہے۔‘‘

ذریعہ : سی آئی ایس ایم ای ایف