ضلع گنگنان، گوئگنگ، گوانگشی: چاؤشو ڈاؤن میں انقلابی تبدیلی

گوئگنگ، چین، 11 دسمبر 2021 /ژن ہوا-ایشیانیٹ/– حالیہ دنوںمیں، چاؤشو – چائنا  ڈاؤن ویلی کے پلاٹ بی کی تعمیر  زوروں  پر ہے اور زمین کو ہموار کرنے کے لئے متعدد بڑی مشینیں لگائی گئی ہیں، کیونکہ یہاں ایک ڈاؤن فیدر فیکٹری تعمیر کرنے کا منصوبہ بنایا گیا ہے۔ ضلع گنگنان کے تشہیری محکمہ گوئگنگ کے مطابق اس منصوبے کیکل اراضی رقبہ جو ہموار ہوگا، 69618.12 مربع میٹر ہے، دو پیداواری ورکشاپس تعمیر کرنے کا منصوبہ ہے جو 40 ہزار مربع میٹر کے رقبے پر محیط ہیں۔ اس سال اپریل میں پلاٹ ‘اے’ کو پیداوار میں شامل کیا گیا ہے جو ضلع گنگنان میں ڈاؤن فیدر انڈسٹری کی تبدیلی اور اپ گریڈیشن میں ایک لازمی پیش رفت ہے۔

زیر تعمیر چاؤشو – چین ڈاؤن ویلی

1980 کی دہائی میں گوانگ ژی کے ضلع گنگنان، گوئگنگ کی چاؤشو ڈاؤن فیدر انڈسٹری پھل پھول رہی تھی۔ 40 سال سے زیادہ عرصے سے چاؤشو ڈاؤن فیدر انڈسٹری نے اعلیٰ معیار کے ڈاؤن وسائل اکٹھا کرکے اور بہت کم سرمایہ کاری کے ساتھ صنعتوں پر انحصار کرتے ہوئے لیکن فوری نتائج کے ساتھ ساتھ کاروبار اور زراعت میں لچک کے ساتھ  “چین میں ڈاؤن کے آبائی شہر”، “چین میں اعلی معیار کی  ڈاؤن پروڈکس بیس اور “چین میں بہترین ڈاؤن فیدر انڈسٹریل کلسٹر” کی بنیاد رکھی ہے۔ یہ مصنوعات ژجیانگ، شنگھائی اور جاپان، کوریا، امریکہ اور یورپ سمیت دیگر خطوں اور ممالک کو فروخت کی جاتی ہیں اور پروسیسنگ کا حجم چین کا 28 فیصد یعنی دنیا کا 18 فیصد ہے۔

موجودہ فوائد کو مستحکم کرنے کے لئے چاؤشو ٹاؤن حکومت اور گوانگ ژی چاؤشو لوٹس ڈاؤن فیدر گروپ کمپنی لمیٹڈنے مشترکہ طور پر چاؤشو- چائنا ڈاؤن ویلی کا پروجیکٹ قائم کرنے کی تیاری کی ہے تاکہ اسے ، جدت سازی اور بین الاقوامیت سازی ، دانش سازی کے ساتھ معیاری  جدید ٹیکنالوجی اور اعلی ویلیو ایڈڈ مصنوعات کی  ایک نئی فیکٹری میں ڈھالا جا جاسکے۔مجموعی سرمایہ کاری آر ایم بی 1.615 بلین ہونے کی توقع ہے اور تعمیر کے لئے عمارت کا رقبہ 46.19 ہیکٹر رہنے کا منصوبہ ہے۔ اس منصوبے کو تین مرحلوں میں تقسیم کیا جائے گا جس کی تعمیر کی مدت 5 سال پر محیط ہوگی۔ پروجیکٹ کے لئے برانڈ کی کاشت کاری کے منصوبے پر فعال طور پر عمل درآمد کیا گیا ہے جس میں 20 سے زائد اعلی معیار کے برانڈز، جیسے “چاؤشو ڈاؤن”، “لوٹس ڈاؤن کلیٹ” اور “لوٹس سٹی ہوم ٹیکسٹائل” کی کاشت کی گئی ہے پروجیکٹ کے لئے بھی ہائی ٹیک ٹیکنالوجیز متعارف کرائی گئی ہیں جس میں کم کاربن ماحولیاتی تحفظ کی ٹیکنالوجی، گندے پانی کے ماحولیاتی تحفظ کا علاج اور ری سائیکلنگ اور پیداواری توانائی کی اعلی تبدیلی کی شرح اور یزیلیف ایکولوجیکل بریڈنگ بیس، ڈاؤن مصنوعات کی مخصوص بدبو کو ختم کرنے اور چاؤشو کی اعلی معیار کی فراہمی کے خام مال کی مزید ضمانت دینے کے لئے تعمیر کیا گیا ہے۔ ڈیٹرجنٹ سے پاک پروڈکشن لائن اور ایک جدید اسٹریلائیزیشن نظام کو مصنوعات کی بدبو کو ختم کرنے اور ڈاؤن کی اصل ماحولیاتی خصوصیات کو برقرار رکھنے کی بنیاد پر مصنوعات کے معیار کو بہتر بنانے کے لئے منصوبے کو مزید جدت سے تیار کیا گیا ہے۔ مزید برآں، چاؤشو ڈاؤن ٹریڈنگ سینٹر اور ایکسپو سائنس اینڈ انوویشن سینٹر کے منصوبوں کو مجموعی طور پر فروغ دیا جا رہا ہے تاکہ اختراعی تحقیق اور ترقیاتی ٹیکنالوجیز کابہتر طور پر بندوبست کیا  جا سکے اور صنعتی تکنیکی اختراع کو فروغ دیا جا سکے۔

ڈاؤن پروڈکٹس کا ایک قومی اعلیٰ صنعتی کلسٹر تعمیر کرنے کے لئے یہ پروجیکٹ گوانگ ژی میں واحد روایتی ڈاؤن فیدر انڈسٹری کی تبدیلی اور اپ گریڈنگ کا احساس کرے گا اور سائنسی افزائش نسل، گہری فنشنگ پروسیسنگ اور آن لائن اور آف لائن فروخت کا پورا صنعتی سلسلہ قائم کرے گا۔منصوبے کے عمل میں آنے کے بعد اس کی سالانہ پیداوار 63,000 ٹن ڈاؤن (فیدر)، 5 ملین ڈاؤن کلیٹس، جس کی آؤٹ پٹ ویلیو 10 بلین آر ایم بی اور ٹیکس ریونیو 300 ملین آر ایم بی ہوگی، جس سے 8,000 سے زائد ملازمت کے مواقع پیدا ہوں گے۔

ماخذ: ضلع گنگنان،گوئگنگ کا محکمہ تشہیر

منسلکہ تصویری  لنکس:
لنک : http://asianetnews.net/view-attachment?attach-id=410539

 

 

Gangnan District, Guigang, Guangxi: Transformation of Qiaoxu Down

GUIGANG, China, Dec. 11, 2021 /Xinhua-AsiaNet/– Recently, Plot B of Qiaoxu – China Down Valley has been under construction in full swing and multiple large machines have been operated for land leveling, as a down feather factory is planned to be built here. According to the Publicity Department of Gangnan District, Guigang, the total planned land area of the project is 69618.12 square meters, two production workshops are planned to be built, covering an area of 40,000 square meters. In April this year, Plot A has been put into production, marking an essential stride in the transformation and upgrading of the down feather  industry in Gangnan District.

Qiaoxu – China Down Valley under construction

Qiaoxu down feather industry of Gangnan District, Guigang, Guangxi was flourishing in the 1980s. For over 40 years, Qiaoxu down feather industry has grown rapidly by gathering the high-quality down resources and relying on the industries with little investment but quick results as well as the flexibility in business and agriculture, laying a foundation for the reputations of “Hometown of Down in China”, “High-quality Down Production Base in China”, and “Excellent Down Feather Industrial Cluster in China”. The products are sold to Zhejiang, Shanghai, and other regions and countries, including Japan, Korea, the United States and Europe, and the processing volume accounts for 28% of China, 18% of the world.

To consolidate existing advantages, Qiaoxu Town Government and Guangxi Qiaoxu Lotus Down Feather Group Co., Ltd. have prepared to jointly set up the Project of Qiaoxu – China Down Valley to build it into a new factory with advanced technology and high value-added products upon standardization, modernization and internationalization, intellectualization. The total investment is expected to be RMB1.615 billion, and the building area for the construction is planned to be 46.19 hectares. The Project will be divided into three phases, with a construction period of 5 years. For the Project, the brand cultivation plan is actively implemented, cultivating more than 20 high-quality brands, such as “Qiaoxu Down”, “Lotus Down Quilt” and ” Lotus City Home Textile”. High-tech technologies are introduced for the Project as well, including low-carbon environmental protection technology, wastewater environmental protection treatment and recycling and high conversion rate of production energy, and Yezzileaf Ecological Breeding Base is built to eliminate the peculiar odor of down products and further guarantee the raw materials supply of Qiaoxu high-quality down. The detergent-free production line and an advanced sterilization system are innovated and developed in the Project to eliminate the product odor and improve the product quality on the premise of maintaining the original ecological properties of down. Moreover, the projects of Qiaoxu Down Trading Center and Expo Science and Innovation Center are being promoted as a whole to better undertake innovative research and development technologies and promote industrial technological innovation.

Aiming to build a national high-end industrial cluster of down products, the Project will realize the transformation and upgrading of the only traditional down feather industry in Guangxi, and establish the whole industrial chain of scientific breeding, deep finishing processing and online and offline sales.  After the Project is put into operation, it will have an annual output of 63,000 tons of down (feather), 5 million of down quilts, with an output value of RMB 10 billion and tax revenue of RMB 300 million, creating more than 8,000 job opportunities.

Source: The Publicity Department of  Gangnan District, Guigang

Image Attachments Links: Link: http://asianetnews.net/view-attachment?attach-id=410539

 

‫2021 کی مفاہمتی چین کانفرنس (گوانگ ژو) میں شرکت کرنے والے افراد کا عالمی چیلنجوں سے نمٹنے میں مزید بین الاقوامی تعاون پر زور

گوانگ ژو، چین، 10 دسمبر 2021 /ژن ہوا-ایشیانیٹ/–  “کب اور کہاں– دنیا اور چین اور سی پی سی میں بے مثال تبدیلیاں”، تھیم پر مبنی 2021 مفاہمتی چائنا کانفرنس (گوانگ ژو) جو 1 سے 4 دسمبر تک جنوبی چین کے شہر گوانگ ژو میں منعقد ہوئی جس نے عالمی سیاسی، تعلیمی اور اقتصادی برادریوں کی تقریبا 80 مشہور شخصیات کو اپنی طرف متوجہ کیا ہے۔

عالمی ذہنوں کے بھرپور تبادلے کی حوصلہ افزائی کے لئے  12 کامیاب فورمز کا انعقاد کیا گیا جس میں اس بات پر توجہ مرکوز کی گئی کہ دنیا کو درپیش اہم چیلنجوں اور سنگین خطرات کا مستقل حل کیسے پیش کیا جائے۔

سابق برطانوی وزیر اعظم جیمز گورڈن براؤن نے کہا کہ چونکہ ہم  بڑے عالمی چیلنجوں کا سامنا کر رہے ہیں جن کے لیے ماحولیاتی تبدیلی اور عالمی مالیاتی عدم استحکام سے نمٹنے کےلئے تعاون کی ضرورت ہے۔  جس کے لئیے عالمی غربت، تحفظ پسندی، جوہری پھیلاؤ اور وبائی امراض کے خاتمے کے لیے درکار تعاون تک عالمی حل درکار ہیں۔

سنگہوا یونیورسٹی کے وزیٹنگ پروفیسر مارٹن جیکس نے کہا کہ سی پی سی کی کامیابی چینی تہذیب کا مظاہرہ کرنے اور اسے واضح کرنے کی صلاحیت میں مضمر ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ پارٹی کی ترقی راتوں رات سنسنی خیزی کے بجائے ایک طویل عمل سے گزری ہے اور اس نے مسلسل اصلاحات کے ذریعے خود کو بہتر بنایا ہے۔

یونیورسٹی آف کیلیفورنیا، لاس اینجلس میں ایمٹ انسٹی ٹیوٹ آن کلائمٹ چینج اینڈ دی انوائرمنٹ کے پروفیسر اور شریک ڈائریکٹر ایلکس وانگ نے کہا کہ چین کو شمسی توانائی، الیکٹرک گاڑیوں اور بیٹریوں جیسے شعبوں میں بہت تجربہ ہے۔ تعاون کرکے چین اور دنیا دونوں کے اشتراک کو بہتر بنانے اور آب و ہوا پر کارروائی میں تیزی لانے میں مدد دے سکتا ہے۔

کانفرنس میں “تعاون” سب سے ضروری اور مضبوط موضوع رہا۔ اسے کوویڈ-19 پر تعاون، عالمی صنعتی چین کا خاکہ، کاربن غیر جانبداری اور اخراج کے مقصد کا ادراک، دنیا بھر میں بنیادی ڈھانچے کی ترقی اور رابطے اور بین الاقوامی کاروباری ماحول کی صف بندی جیسے موضوعات میں دیکھا جاسکتا ہے۔

ویڈیو لنک کے ذریعے بین الاقوامی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے عالمی تجارتی تنظیم کے سابق ڈائریکٹر جنرل پاسکل لامی نے نشاندہی کی کہ ویکسین کا فرق، ڈیجیٹل تقسیم، کاربن کے اخراج کا فرق اور دولت میں تفاوت اب بھی عالمی امن اور ترقی کے لئے شدید چیلنجوں اور خطرات کا باعث ہے۔

انہوں نے کہا کہ اگر ان مختلف خطرات اور چیلنجوں کا جائزہ درست ہے تو پھر اس سے بھی زیادہ محنت کرکے ان سے نمٹنے کے سوا کوئی چارہ نہیں ہے۔

تقریب کے حاضرین نے وسیع پیمانے پر اس خیال کو سراہا اور مزید بین الاقوامی تعاون پر زور دیا۔

یہ تیسرا موقع ہے جب گوانگ ژو نے عظیم الشان ایونٹ کی میزبانی کی ہے۔ اور کچھ عرصہ پہلے جنوبی چین کے متحرک شہر میں آن لائن اور آف لائن منعقد ہونے والے ایک غیر معمولی بین الاقوامی تجارتی میلے (کینٹن فیئر) کا افتتاح ہوا جس میں ہزاروں بیرون ملک خریدار وں کو اپنی طرف متوجہ کیا اور گوانگ ژو انٹرنیشنل ایوارڈ فار اربن انوویشن کی ایک متاثر کن ایوارڈ تقریب منعقد کی۔ ان تمام عناصر کو جو تاریخی شہر میں بہت سے دلچسپ واقعات لائے گئے ہیں نے اسے مزید متنوع اور متحرک بنا دیا ہے۔

ماخذ: 2021 مفاہمتی چین کانفرنس (گوانگ ژو(

Nuvei Expands its Acquiring Capabilities to the United Arab Emirates and North Africa

MONTREAL and DUBAI, Dec. 10, 2021 (GLOBE NEWSWIRE) — Nuvei Corporation (“Nuvei” or the “Company”) (Nasdaq: NVEI) (TSX: NVEI), the global payment technology partner of thriving brands, announced today its expansion of local acquiring services to support merchants in the United Arab Emirates (UAE) and North Africa. Nuvei is certified by the Dubai Multi Commodities Centre (DMCC) and licensed to operate in the free trade zone. This new development positions the Company well to support its existing merchant base, as well as local merchants and international businesses looking to expand their footprint into this booming market.

As a region with an increasing global population, the UAE and North Africa are exploding with cross-border expansion potential: 60% of UAE consumers have purchased from an international online retailer. Alternative payment methods (APMs) like Google Pay and Apple Pay are also gaining significant traction. Nuvei will support growth-minded merchants by offering access to its full stack of innovative solutions, including APMs and other locally-preferred payment methods, plus direct connectivity to all the major payment card schemes. Through one single point of integration, merchants will benefit from a seamless, secure and compliant payment journey for their customers.

According to Global Data, the UAE’s eCommerce market has grown by 33% in five years and is expected to grow another 104% by 2024. Through Nuvei’s technology, merchants can tap into this potential, enabling them to support the different preferences and requirements of local and overseas consumers. Merchants will also benefit from the Company’s state-of-the-art tools, increasing approval rates, as well as reducing the traditional manual and lengthy onboarding process, and associated high payment fees.

“This launch marks the acceleration of our strategic global expansion plans,” said Philip Fayer, Nuvei’s Chair and CEO. “Investing in a physical presence and benefiting from our experts’ local market knowledge will make a huge difference to our existing clients in the region, as well as the many domestic and international businesses looking to optimize their payment strategies in this flourishing market.”

“We have experienced a surge in new merchant demand in the UAE and North Africa, along with calls for greater support from existing customers in the region,” said Praful Morar, Chief Strategy Officer, Digital Payments at Nuvei. “We are delighted that with our local solutions and expertise, we will be able to meet this demand, as we are seeing major traction in retail, financial services, travel, and digital goods and services.”

About Nuvei

We are Nuvei (Nasdaq: NVEI) (TSX: NVEI) the global payment technology partner of thriving brands. We provide the intelligence and technology businesses need to succeed locally and globally, through one integration – propelling them further, faster. Uniting payment technology and consulting, we help businesses remove payment barriers, optimize operating costs and increase acceptance rates. Our proprietary platform provides seamless pay-in and payout capabilities, connecting merchants with their customers in over 200 markets worldwide, with local acquiring in 45 markets. With support for over 500 local and alternative payment methods, nearly 150 currencies and 40 cryptocurrencies, merchants can capture every payment opportunity that comes their way. Our purpose is to make our world a local marketplace.

For more information, visit www.nuvei.com.

Attachment

Public Relations
PR@nuvei.com

Investor Relations
IR@nuvei.com

‫گوئزو نے 2021 میں اناج کی پیداوار میں 3.49 فیصد اضافہ کے ساتھ بھرپور فصل حاصل کی

گویانگ، چین، 10 دسمبر، 2021/شنہوا-ایشیاءنیٹ/ — نیشنل بیورو آف اسٹیٹاسٹکس(این بی ایس) نے 6 دسمبر کو اعلان کیا کہ گوئزو  نے سال بہ سال اناج کی پیداوار میں 3.49 فیصد اضافہ کے ساتھ ایک اور شاندار فصل حاصل کی ہے، 2021 میں گوئزو کی اناج کی مجموعی پیداوار تقریباً 10.949 ملین ٹن تک پہنچ گئی ہے۔

کاشت کا مجموعی کا رقبہ 41.8155 ملین ایم یو (تقریباً 2.802 ملین ہیکٹر)  ہوگیاہے، جو سال بہ سال 1.22 فیصد زیادہ ہے۔

30 نومبر کو، گوئزو  صوبے کے محکمہ زراعت اور دیہی امور نے ماہرین کو سینان کاؤنٹی، گوئزو  صوبے کے ٹونگرین شہر کے آزمائشی کھیت میں سدابہار چاول کی پیداوار کو ماپنے کے لیے مدعو کیا۔

اس کھیت کے چاول کی کٹائی کا یہ دوسرا سال ہے اور اس کی پیداوار 843.3 کلوگرام فی ایم یو (تقریباً 0.067 ہیکٹر) تک پہنچ گئی ہے، جو گوئژو میں سدابہار چاولوں کی موسم سرما میں  کامیاب فصل کی نشاندہی کرتا ہے۔

اس سال اناج کی پیداوار اور پودے لگانے کے رقبے میں اضافے کے ہدف کو حاصل کرنے کے لیے، اناج کی پیداوار تمام سطحوں کی حکومتوں میں گوئزو  حکومت کی کارکردگی کی قدر پیمائی کے نظام میں سے ایک بن گئی ہے۔ ہر سطح پر حکومتوں کے رہنما مقامی اناج کی پیداوار بڑھانے کے ذمہ دار ہیں۔

گوئزو  صوبے کے محکمہ زراعت اور دیہی امور کے رہنما 1,000  ایم یو (تقریباً 67 ہیکٹر) کھیت کے میدانوں کے انچارج ہیں اور تمام سطحوں پر حکومتوں کے رہنما 108 نمائشی  کھیت کے میدانوں کے لیے ذمہ دار ہیں۔ اس کا مجموعی  رقبہ تقریباً 100,000  ایم یو  (تقریباً 6,700 ہیکٹر) تک پہنچ گیا ہے۔ اس اقدام سے مختلف علاقوں میں غذائی پیداوار میں اضافہ ہوا ہے۔

اگست کے بعد سے، گوئزو  کے مختلف علاقوں میں اناج کی پیداوار نے شاندار نتائج حاصل کیے ہیں۔ زونی شہر کی ژینگان کاؤنٹی میں،جنگلی جوار کی پیداوار 541.7 کلوگرام فی ایم یو (تقریباً 0.067 ہیکٹر) تک پہنچ گئی، جو گوئزو کی ریکارڈ بلندی ہے۔

سینان کاؤنٹی، ٹونگرین شہر کے شکرقندی کے اعلیٰ پیداوار والے نمائشی مقام میں، شکرقندی کی اوسط پیداوار 4327.9 کلوگرام فی ایم یو تک پہنچ گئی ہے، جس نے گوئژو میں ایک نیا ریکارڈ قائم کیا ہے۔

چیانگ ڈونگنان میاؤ اور ڈونگ آٹونومس پریفرنس کے شنگئی شہر میں چاول کی فصل 1123.87 کلوگرام فی ایم یو تک پہنچ گئی، جس نے گوئزو میں پیداوار کا ریکارڈ توڑ دیا ہے۔

بیجی سٹی کی نییونگ کاؤنٹی میں مکئی کی پیداوار 1059.1 کلوگرام فی ایم یو تک پہنچ گئی، جس نے گوئزو میں ایک نیا ریکارڈ قائم کیا ہے۔

2021 میں، گوئزو نے اعلیٰ معیاری کھیت کے میدان  بنانے کے لیے ایک پروگرام شروع کیا اور 2.5 ملین ایم یو  (تقریباً 167.5 ہزار ہیکٹر) اضافی کھیتوں کے میدان بنانے کا منصوبہ بنایا۔

اس پروگرام کے مطابق ،  ایک اعلیٰ معیار کا گرَین  اینڈ آئل اسٹیئرنگ گروپ  جو 93 ماہرین اور 2,256 سائنس اور ٹیکنالوجی کے نمائندوں پر مشتمل ہے ،کسانوں کو زرعی علم اور پودے لگانے کی مہارت سکھانے کے لیے کھیت کے میدانوں میں جائے گا۔

“کھیتوں کی زمین کو پودے لگانے کی مشین کے موافق   تیارکرنے” اور “کھیتوں کے لیے پودے لگانے والی مشینوں کو ان کے موافق ترتیب دینے” کے اصولوں کی بنیاد پر، 1.42 ملین زرعی مشینوں کے سیٹ اناج لگانے اور موسم بہار سے خزاں تک خوراک کی پیداوار بڑھانے کے لیے استعمال کیے گئے ہیں۔ گوئزو کی اہم اناج کی فصلوں کی جامع مشین سازی 41 فیصد سے بڑھ کر 43 فیصد ہو گئی ہے۔

مستقبل میں، گوئزو ماحولیات سے بھرپور فائدہ اٹھائے گا اور پیداواری وسائل کو معقول طور پر مختص کرے گا تاکہ اناج کی پیداوار اور معیشت کی ترقی کے درمیان ہم آہنگ ترقی حاصل کی جا سکے اور دیہی احیاء اور زراعت کی جدت سازی کے لیے ایک مضبوط بنیاد بنائی جا سکے۔

ماخذ: گوئزو  صوبے کا محکمہ زراعت اور دیہی امور

Guizhou reaps a bumper harvest with grain output up 3.49 pct in 2021

GUIYANG, China, Dec. 10, 2021 /Xinhua-AsiaNet/ — The National Bureau of Statistics (NBS) said on Dec, 6th that Guizhou secured  yet another bumper harvest, with grain output up 3.49 percent year-on-year, Guizhou’s total grain output reached nearly 10.949 million tons in 2021.

The total sown area is 41.8155 million mu(about 2.802 million hectares), edged up 1.22 percent year-on-year.

On November 30th, Department of Agriculture and Rural Affairs of Guizhou Province invited experts to measure the production of perennial rice in a trial field of Sinan County, Tongren City of Guizhou Province.

It’s the second year of harvest of this field’s rice and its yield has reached 843.3 kg per mu (about 0.067 hectares), which indicates the successful overwintering of perennial rice in Guizhou.

To achieve the goal of this year’s grain production and of increasing planting area, grain production has become one of Guizhou government performance evaluation system in governments at all levels. Leaders of governments at all levels are responsible for increasing local grain production.

Leaders of Department of Agriculture and Rural Affairs of Guizhou Province have been in charge of over 1,000 mu(about 67 hectares) farm fields and leaders of governments at all levels are responsible for 108 demonstration farmland. Its total area reached nearly 100,000 mu (about 6,700 hectares). This action has boosted the food production in different areas.

Since August, grain production of different areas in Guizhou has achieved great results. In Zheng’an County of Zunyi City, yield of sorghum reached 541.7 kg per mu (about 0.067 hectares), which hits Guizhou’s record high.

In the High-yield Sweet Potato Demonstration Base of Sinan County, Tongren City, the average yield of sweet potato has reached 4327.9 kg per mu, which sets a new record in Guizhou.

In Xingyi City of Qiandongnan Miao and Dong Autonomous Prefecture, the yield of rice reached 1123.87 kg per mu, which breaks the record in Guizhou.

In Nayong County of Bijie City, the yield of corn reached 1059.1 kg per mu, which sets a new record in Guizhou.

In 2021, Guizhou launched a program to build high-standard farm field and plan to build 2.5 million mu (about 167.5 thousand hectares) extra farm fields.

According to this program, a high-quality grain and oil steering group consisted of 93 experts and 2,256 science and technology correspondents will go to field to teach farmers agricultural knowledge and planting skills.

Based on principles of “adjusting farmland to fit planting machine” and “adjusting planting machines to fit farmland”, 1.42 million sets of agricultural machines have been used to plant grains and increase food production from spring to autumn. Comprehensive mechanization of Guizhou’s major grain crops has increased from 41 percent to 43 percent.

In the future, Guizhou will make full use of ecology advantage and allocate production resources reasonably to achieve a coordinate development between grain production and economy development and build a solid foundation for rural revitalization and agricultural modernization.

Source: Department of Agriculture and Rural Affairs of Guizhou Province

People attending 2021 Understanding China Conference (Guangzhou) call for more international cooperation in tackling global challenges

GUANGZHOU, China, Dec. 10, 2021 /Xinhua-AsiaNet/– Themed “Whence and Whither — Unprecedented Changes in the World and China and  the CPC”, 2021 Understanding China Conference (Guangzhou), scheduled from Dec.  1 to 4 in the southern Chinese city of Guangzhou, has attracted nearly 80  celebrated figures from the global political, academic and economic  communities.

A total of 12 successive parallel forums were held as a way of encouraging a vigorous exchange of global minds, with a focus on how to offer a more permanent solution to the pressing challenges and grave risks the world is facing.

“Because we are confronting huge global challenges that require global solutions from the cooperation we need on climate change and addressing global financial instability to the cooperation now required to eradicate global poverty, protectionism, nuclear proliferation and pandemics,” said former British prime minister James Gordon Brown.

Martin Jacques, a visiting professor at Tsinghua University, said the success of the CPC lies in its ability to demonstrate and elucidate the Chinese civilization. He added that the Party’s development has undergone a prolonged process, rather than an overnight sensation, and it has improved itself through constant reforms.

Alex Wang, a professor and co-director at the Emmett Institute on Climate Change and the Environment at the University of California, Los Angeles, said China has a lot of experience in areas such as solar power, electric vehicles and batteries, and cooperation can help both China and the world in improving sharing and the acceleration of action on the climate.

“Cooperation” is the most urgent and strongest call in the conference. This can be seen in topics like cooperation on COVID-19, the layout of global industrial chains, the realization of the goal of carbon neutrality and emission peak, worldwide infrastructure development and connectivity, and the alignment of the international business environment.

Addressing the international conference via video link, Pascal Lamy, former director-general of the World Trade Organization, pointed out that the vaccine gap, digital divide, carbon emissions gap and wealth disparity still pose severe challenges and risks to global peace and development.

He said that, if the assessment of these various risks and challenges is correct, then there is no choice but to address them by working together even harder.

Attendees of the event widely echoed the view and called for more international cooperation.

This is the third time Guangzhou has played host to the grand event. And not long ago, the dynamic southern Chinese city saw the opening of an unprecedented international trade fair (Canton Fair) held online and offline that drew hundreds of thousands of overseas buyers and an impressive award ceremony of the Guangzhou International Award for Urban Innovation. All these elements that a host of exciting events brought to the historic city have just made it all the more diverse and dynamic.

Source: 2021 Understanding China Conference (Guangzhou)